Jazbat

کل میں کچھ لکھنا چاہ رہا تھا پر لکھ نہیں پا رہا تھا۔ میرے ذہن میں ایک خیال آیا جو اس وقت بڑا خوشنما معلوم ہوا کہ عبارت کا حسن استعارہ ہے۔ چونکہ میں شاعر ہوں اس لیے بے سروپا استعارے استعمال کرنے میرے لیے کچھ مشکل کام نہ تھا۔ میں نے فوراََ ایک تحریر لکھی جس میں جہا ںکہیں بھی استعارہ لگ سکتا تھا لگایا۔ اکثر یہ ہوتا ہے کہ انسان کچھ لکھتا ہے تو فوراُُ اس کی قیمت اور حیثیت معلوم نہیں ہوتی۔ آپکی بات میں تسلسسل ہے یا وہ بامعنی ہے؟ یہ اس وقت معلوم نہیں ہوتا۔ وجہ یہ ہوتی ہے کہ جب آپکے ذہن میں ایک خیال کی تصویر جمی ہوتی ہے تو جو کچھ آپ کے قلم سے نکل کر تحریر کی صورت اختیار کرتا ہے اور جو کچھ آپکے ذہن میں ہوتا ہے اکثر ایک دوسرے میں ضم ہو جاتا ہے۔ نتیجہ یہ ہوتا ہے کہ آپکو اس وقت کی لکھی ایک بے ربط تحریر بھی اس وقت باربط معلوم ہوتی ہے۔میرے ساتھ بھی کچھ ایسا ہی ہوا۔ جب میں نے وہ تحریر لکھنے کے بعد فوراََ پڑھی تو مجھے وہ ایک شاندار اور پر اثر تحریر معلوم ہوئی۔ میں اپنی کارکردگی پر بہت خوش ہوا اور پھر دوسرے کاموں میں مصروف ہوگیا۔ رات کو جب اس تحریر پر میری نظر پڑی تو یہ کیا؟ پوری کی پوری تحریر تسلسل سے خالی تھی، بہت سے استعارے بالکل غلط لگے ہوئے تھے اور ایک آدھ جملے کے علاوہ ساری تحریر بالکل پھیکی تھی۔ تب مجھے یہ معلوم ہوا کہ استعارے بے شک تحریر میں جان پیدا کرتے ہیں مگر اصل چیز انسان کے جذبات ہیں۔ استعارے انسان کے جذبات کو ابھارتے ہیں۔ انسان کو کبھی غمگین کرتے ہیں اور کبھی ہنساتے ہیں اور کبھی اسے احساس کی کسی ایسی دنیا میں لے جاتے ہیں جہاں ہر چیز ماورائی معلوم ہوتی ہے۔ یہ کیسے ممکن ہو سکتا ہے کہ ایک شاعر یا نثر نگارکسی جملے یا شعر میں استعارہ استعمال کرے اور اسکے دل میں استعارے کو دمِ عیسٰی دینے کے لیے جذبات نہ ہوں اور پھر بھی وہ استعارہ تحریر میں جچ جائے۔ یہ ناممکن ہے۔ یہ تو ایسا ہی ہے جیسے کوئی اندھا کسی کا راہبر بن جائےجتنی کسی اندھے سےیہ امید کی جا سکتی ہے کہ وہ کسی منزل تک ہمیں پہنچائے اتنی ہی ایک جذبات سے عاری انسان کی تحریر سے یہ توقع کی جا سکتی ہے کہ وہ ہمارے دل میں کوئی جذبہ بیدار کرے۔


مصنف: محمد علی حافظ

Creative Commons License
This work is licensed under a Creative Commons Attribution 4.0 International License.

Advertisements

A comment to encourage us?

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s